اتوار، 16 دسمبر، 2018

Siddiq Awr Zindeeq



صدیق اور زندیق 

’’پروانے نے اداے جاں نثاری كسی مكتب میں جاكر نہیں سیکھی ۔ سوز اُس کی فطرت میں موجود تھا، شمع کو دیکھا تو مچل کر جل گیا۔ حضرت صدیق رضی اللہ تعالیٰ عنہ نے شمع رسالت کو دیکھا تو اداے جاں نثاری سے صدیق کے مرتبے کو پہنچ گئے ۔ محبت چوں کہ خود صدیق ہے اِس لیے صدیق بنادیتی ہے ۔ عقل خود غرض ہے اِس لیے زندیق بناچھوڑتی ہے۔ صدیق بننے کے لیے محبت کے کوچے میں آنا پڑتا ہے   ؂
عقل عیّار ہے سَو بھیس بنالیتی ہے 
عشق بے چارہ نہ زاہد ہے نہ ملا نہ حکیم
 ( منتخباتِ مشاہدسے اک اقتباس)

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

..:: FOLLOW US ON ::..



http://www.jamiaturraza.com/images/Facebook.jpg
http://www.jamiaturraza.com/images/Twitter.jpg

ٹیوٹر اپڈیٹس دیکھیں اور فالو کریں